124

Narwhal … ناروھال

۔Narwhal … ناروھال

ایک سمندری جانور (مچھلی) ہے جو وھیل کی نسل سے تعلق رکھتا ہے۔ یہ ممالیہ جانور ہے اور کینیڈا، گرین لینڈاور روس کے شمالی سمندروں میں پایا جاتا ہے۔ اس کا اوسط وزن آدمی کے وزن سے 20 گنا زیادہ ہوتا ہے۔ اس جانور کی خاص بات یہ ہے کہ نر جانورکے سامنے ہاتھی کے دانت کی طرح ایک لمبا سا دانت ہوتا ہے جو بالکل سیدھا ہوتا ہے اور اس پر کسی اسکرو کی طرح ہلکی سی پیچ دار

چوڑی بنی ہوتی ہے۔ یہ ہمیشہ ناروھال کا بایاں دانت (canine) ہوتا ہے۔ شاذ و نادر ناروھال کا دایاں دانت بھی لمبا ہو سکتا ہے۔ ہاتھی کے دانت (Tusk) کی طرح ناروھال کا دانت بھی اوپری جبڑے سے جڑا ہوتا ہے۔
ڈولفن اور بیشتر وھیل مچھلیوں کے گردن کے مہرے (vertebrae) آپس میں جُڑے ہوئے ہوتے ہیں لیکن ناروھال کی گردن کے مُہرے انسان کی گردن کی طرح الگ الگ ہوتے ہیں۔ انسان سمیت سارے ممالیہ جانوروں کی گردن کے مہروں کی تعداد سات ہوتی ہے۔ زرافے کی گردن میں بھی سات ہی مہرے ہوتے ہیں۔
ناروھال سارا سال آرکٹک سمندروں میں ہی گزارتے ہیں اور وھیل مچھلیوں کی طرح ہجرت نہیں کرتے۔گرمیوں میں نر ناروھال اکثر 5000 فٹ کی گہرائی تک غوطہ لگاتے ہیں اور 25 منٹ تک سانس روکے رکھتے ہیں۔ وھیل مچھلیوں کی طرح ناروھال بھی آواز نکالتے ہیں اور ایک دوسرے سے آواز کے ذریعہ ربط بنائے رکھتے ہیں۔
ناروھال کی عمر لگ بھگ 50 سال ہوتی ہے۔ کبھی کبھار یہ پانی جم جانے کی وجہ سے برف کے نیچے سانس نہ ملنے کے باعث دم گھٹ کر مر جاتے ہیں۔ ایک اندازہ کے مطابق اس وقت ان کی کل تعداد کم و بیش 75000 ہی رہ گئی ہے۔ شمالی کینیڈا کے انویٹ قبیلے کے لوگ کٸ سو سالوں سے اور آج بھی گوشت اور دانت کے لیے ناروھال کا شکار کرتے ہیں۔

اس مضمون پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں